999795-train-1510898962-382-640x480

ٹرین 20 سیکنڈ پہلے روانہ ہونے پر ریلوے کو معافی مانگنی پڑگئی

غلطی اس لیے ہوئی کیونکہ عملے نے ٹرین کی روانگی کے ٹائم ٹیبل کوچیک نہیں کیا تھا؛ انتظامیہ؛ فوٹوفائل

ریل کمپنی کو ٹرین کےمقررہ وقت سے 20 سیکنڈ جلد روانہ کرنے کے لئے عوام سے معافی مانگنی پڑگئی۔

پاکستان میں ٹرین کی آمدورفت میں تاخیر معمول کی بات سمجھی جاتی ہے، لوگ اس تاخیرکے اتنے زیادہ عادی ہوگئے ہیں کہ کبھی غلطی سے ٹرین اپنے مقررہ وقت پر اسٹیشن پر آجائے یا اسٹیشن سے روانہ ہوجائے تو حیرت ہونے لگتی ہے ۔ تاہم دنیا میں ایسے ممالک بھی موجود ہیں جہاں ٹرین کی مقررہ وقت پر روانگی کو یقینی بنایا جاتا ہے اور مقررہ وقت سے تاخیر یا جلدی روانگی پر انتظامیہ اسے اپنی غلطی تسلیم کرتے ہوئے عوام سے معافی مانگتی ہے۔ایسا ہی کچھ جاپان میں ہوا ہے جہاں ایک ریل کمپنی نے ٹرین کی جلد روانگی پر عوام سے معافی مانگی ہے۔

جاپان کے شہر ٹوکیو اور سکوبہ شہر کے درمیان چلنے والی سکوبہ ایکسپریس لائن  کو 9 بج کر 44 منٹ اور 40 سکینڈ پر روانہ ہونا تھا مگر ٹرین اپنے مقررہ وقت سے 20 سیکنڈ پہلے یعنی  9 بج کر 44 منٹ اور 20 سیکنڈ پر روانہ ہوئی۔جس پرریل انتظامیہ  نے اس واقعے کے حوالے سے شہریوں کو پیش آنے والی مشکل پر معافی مانگی ہے۔

 train company’s apology for 20-second-early departure is one of the best things about England

Taking the time to sincerely think about the question “Who cares?” after a minor screw-up is part of what makes life in Japan great.

en.rocketnews24.com

کمپنی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ غلطی اس لیے ہوئی کیونکہ کمپنی کے عملے نے ٹرین کی روانگی کے ٹائم ٹیبل کو صحیح طرح چیک نہیں کیا تھا۔ بیان میں انتظامیہ کی جانب سے وضاحت کی گئی ہے کہ کسی بھی صارف نے جلدی روانگی پر کوئی شکایت نہیں کی لیکن ہم پھر بھی معافی کے طلبگار ہیں۔

واضح رہے کہ جاپان کا ریلوے نظام دنیا کے بہترین ریلوے نظاموں میں سے ایک ہے اور یہاں کسی ٹرین کے متعین وقت کے علاوہ روانہ ہونا انتہائی حیران کن امر ہے۔

دنیا بھر کے صارفین نے جاپان کی ریل کمپنی کی جانب سے معافی مانگے جانے کے عمل کو سراہا ہے۔ ایک صارف نےریل انتظامیہ کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ  انہوں نے برطانیہ میں ایسا کبھی کچھ نہیں دیکھا۔

A bullet train in Tokyo, Japan

Apology after train departs seconds early

Management on the Tsukuba Express line “sincerely apologised for the inconvenience” caused.

bbc.co.uk

ایک اور صارف نے ٹوئٹ کیا کہ جاپان میں ٹرین کی 20 سیکنڈ جلدی روانگی پر انتظامیہ کی جانب سے معافی مانگے جانے کے عمل پر سمجھ نہیں آرہا کہ رویاجائے یا ہنسا جائے۔

“Apology after Japanese train departs 20 seconds early”.
Read; weep; read; laugh. @networkrail @SW_Railway@SouthernRailUK

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*