1006799-saadali-1511499982-364-640x480

سعد علی موقع ملنے پر یونس خان کا خلا پُر کرنے کیلیے پُرعزم

24 سالہ بیٹسمین کو شاندار کارکردگی پر پی ایس ایل کیلیے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اپنے اسکواڈ میں شامل کیا ہے۔ فوٹو: سوشل میڈیا

راولپنڈی: قائد اعظم ٹرافی کے ٹاپ اسکورر سعد علی قومی ٹیم میں یونس خان کا خلا پُر کرنے کیلیے پُرعزم ہیں۔

’’ سعد علی نے کہا کہ 14 سال کی عمر میں اوپنر کی حیثیت سے پروفیشنل کرکٹ کھیلناشروع کی،کوچ اعظم خان نے مڈل آرڈر بیٹسمین بننے کا مشورہ دیا، اوپنر کی حیثیت سے نئی بال کو کھیلنا ایک اچھا تجربہ تھا تاہم مڈل آرڈر بیٹسمین بننے کیلیے مجھے اپنے کھیل کو بہت تبدیل کرنا پڑا، کوچ کے میری صلاحیتوں پر بھرپور اعتماد سے مجھے آگے بڑھنے کا حوصلہ ملا،  2012 میں قومی انڈر 19  ٹیم کی جانب سے ورلڈ کپ کیلیے بلایا گیا جو میری فیملی،کلب اور بذات خود میرے لیے ایک قابل فخر لمحہ تھا، اس کے بعد میں نے مزید محنت شروع کر دی۔

سعد علی بتایا کہ جونیئر ٹیم میں اچھی کارکردگی پر کینیا کے خلاف ہوم سیریز  کیلیے  پاکستان اے میں شامل کیا گیا، وہاں میری کارکردگی خاطر خواہ نہ رہی تاہم 2016 میں زمبابوے کے خلاف اوے سیریز میں بیسٹ پرفارمر کا اعزاز ملا،  میری اس کارکردگی کے پیچھے کوچ اعجاز احمد  کی محنت کارفرما تھی۔ سعد نے 2015 میں اسٹیٹ بینک کی جانب سے فرسٹ کلاس کیریئر کا آغاز کیا، گزشتہ سال قائد اعظم ٹرافی میں لاہور وائٹس کے خلاف ڈیبیو میچ میں انھوں نے ففٹی اسکور کی۔

بیٹسمین نے کہا کہ فرسٹ کلاس کرکٹ شروع کرنے کے بعد میری کارکردگی  زیادہ اچھی نہیں  رہی کیونکہ مجھے زیادہ میچز کھیلنے کا موقع نہیں ملا،  تاہم حالیہ سیزن میں  یو بی ایل کی جانب سے کھیل رہا ہوں، اس تبدیلی  کے بعد مجھے پروفیشنل اور تجربہ کار پلیئرز سے بہت کچھ سیکھنے کو ملا، سیزن میں ایک ہزار رنز اسکور کرنا میرا ہدف ہے، یو بی ایل جوائن کرنے کے بعد کوچ ندیم خان نے کم از کم 8 سو رنز بنانے کا ہدف دیا، تاہم جب میں نے انھیں بتایا کہ میں صرف اگلی اننگز پر توجہ مرکوز رکھتا ہوں تو وہ بہت خوش ہوئے، انھوں نے پھر بھی اپنے لیے کچھ مقاصد ذہن میں رکھنے کا مشورہ دیا، اس لیے اب موجودہ سیزن میں اپنی کارکردگی سے یو بی ایل کو ٹرافی دلانے کے ساتھ ساتھ ایک ہزار رنز، ڈبل سنچری اور سنچری بنانا چاہتا ہوں۔

24 سالہ بیٹسمین کو شاندار کارکردگی پر پی ایس ایل کیلیے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اپنے اسکواڈ میں شامل کیا ہے، انھوں نے کہا کہ اگرچہ طویل فارمیٹ مجھے زیادہ پسند ہے تاہم پی ایس ایل جیسے ایونٹ میں دنیا کے بہترین پلیئرز کی موجودگی میں بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملے گا۔ انہوں نے بتایا کہ قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ میں مجھے شعیب ملک کی جگہ اسلام آباد کی ٹیم میں جگہ ملی جو میرے لیے اعزاز ہے کیونکہ میں بھی ان کی طرح فنشر بننا چاہتا ہوں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*